Angels World

Welcome to Angels World
 
HomeHome  Angel*Angel*  CalendarCalendar  GalleryGallery  FAQFAQ  SearchSearch  MemberlistMemberlist  UsergroupsUsergroups  RegisterRegister  Log inLog in  
Search
 
 

Display results as :
 
Rechercher Advanced Search
Latest topics
» Youtube keeps asking to link my account to google? make it stop!!?
Wed Aug 03, 2011 4:27 am by Guest

» PLEASE HELP!? youtube username ideas!?!?
Tue Aug 02, 2011 7:17 am by Guest

» چپکے چپکے
Tue Jul 13, 2010 8:22 am by Angel

» basan ki mithai
Fri Jun 18, 2010 7:15 am by Angel

» Chawal k pakore
Fri Jun 18, 2010 7:07 am by Angel

» CATS
Fri Jun 18, 2010 7:06 am by Angel

» MOHAMMAD PBUH
Fri Jun 18, 2010 6:31 am by Angel

» Emotion Uper Walay Member K Liye
Wed May 05, 2010 5:14 am by Angel

» candles-fire
Sat Feb 27, 2010 5:03 am by Angel

Navigation
 Portal
 Index
 Memberlist
 Profile
 FAQ
 Search
Affiliates
Affiliates
Angel 2

Share | 
 

 قرآن کے متعلق معلومات

Go down 
AuthorMessage
Angel



Posts : 170
Points : 3544
Reputation : 1
Join date : 28.07.2009

PostSubject: قرآن کے متعلق معلومات   Tue Jul 28, 2009 11:50 am

القرآن الكريم

قرآن یا قرآن مجید (عربی میں القرآن الكريم ) عالم انسانیت کی عظیم ترین کتاب ہے جو اللہ کا کلام ہے اور عربی زبان میں تقریباً 23 برس کے عرصے میں آخری نبی حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم پر نازل ہوئی۔ قرآن کے نازل ہونے کے عمل کو وحی نازل ہونا بھی کہا جاتا ہے اور یہ کتاب اللہ کے فرشتے حضرت جبرائیل علیہ السلام کے ذریعے حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم پر نازل ہوئی۔ قرآن میں آج تک کوئی کمی بیشی نہیں ہو سکی اور اسے دنیا کی واحد محفوظ کتاب ہونے کی حیثیت حاصل ہے جس کا مواد تبدیل نہیں ہو سکا اور تمام دنیا میں کروڑوں کی تعداد میں چھپنے کے باوجود اس کا متن ایک جیسا ہے۔ اس کی ترتیب نزولی نہیں بلکہ حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی بتائی ہوئی ترتیب کے مطابق حضرت ابو بکر رضی اللہ عنہ کے دورِ خلافت میں اسے یکجا کیا گیا۔ اس کام کی قیادت حضرت زید بن ثابت انصاری رضی اللہ عنہ نے کی۔ قرآن کا سب سے پہلا ترجمہ حضرت سلمان فارسی نے کیا۔ یہ سورۃ الفاتحہ کا عربی سے فارسی میں ترجمہ تھا۔ قرآن کو دنیا کی ایسی واحد کتاب کی بھی حیثیت حاصل ہے جو لاکھوں کی تعداد میں لوگوں کو زبانی یاد ہے ۔ قرآن سابقہ الہامی کتابوں مثلاً انجیل، تورات اور زبور وغیرہ کی تصدیق کرتی ہے۔ یہ الگ بات ہے کہ ان الہامی کتابوں میں بےشمار تبدیلیاں ہو چکی ہیں۔

قرآن کے ابواب اور تقسیم

قرآن ایک بڑی کتاب ہے۔ اس کی تقسیم حضرت محمد صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم اپنی زندگی میں فرما چکے تھے اور یہ رہنمائی کر چکے تھے کہ کس آیت کو کس سورت میں کہاں رکھنا ہے۔ آنحضرت صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی زندگی ہی میں قرآن کے بےشمار حافظ تھے اور حضور صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم شعبان اور رمضان کے مہینوں میں قرآن کئی دفعہ ختم کرتے تھے جو ظاہر ہے کہ کسی ترتیب کے بغیر ممکن نہیں. قرآن کا اعجاز یہ ہے کہ آج تک اس میں کوئی تبدیلی نہیں ہو سکی ۔ پہلی صدی ھجری کے لکھے ہوئے قرآن جو ترکی کے عجائب گھر توپ کاپی میں ہیں یا ایران کے شہر مشھد میں امام علی رضا علیہ السلام کے روضہ کے عجائب گھر میں ہیں، ان میں بعینہہ یہی قرآن خطِ کوفی میں دیکھا جا سکتا ہے جو آج جدید طباعت کے بعد ہمارے سامنے ہے۔ اسے سات منزلوں میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ اس کے علاوہ اس کی ایک اور تقسیم سیپاروں کے حساب سے ہے۔ سیپارہ کا لفظی مطلب تیس ٹکڑوں کا ہے یعنی اس میں تیس سیپارے ہیں۔ ایک اور تقسیم سورتوں کی ہے۔ قرآن میں 114 سورتیں ہیں جن میں سے کچھ بڑی اور کچھ چھوٹی ہیں۔ سب سے بڑی سورت سورۃ البقرہ ہے۔ سورتوں کے اندر مضمون کو آیات کی صورت میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ قرآن میں چھ ہزار سے کچھ زاید آیات موجود ہیں۔

* تلاوت کے لیے قرآن کو سات منازل (منزل کی جمع) میں تقسیم کیا جاتا ہے۔ اس کا فلسفہ یہ ہے کہ ایک منزل روزانہ تلاوت کرنے سے ایک ہفتہ میں قرآن مکمل ہو جاتا ہے۔ ایک ماہ میں قرآن کو مکمل تلاوت کرنے کے لیے تیس سیپاروں (جز) کی تقسیم کی گئی ہے۔
* قرآن کی ایک سو چودہ سورتیں ہیں۔ ہر سورت بسم اللہ الرحمٰن الرحیم سے شروع ہوتی ہے سوائے سورۃ التوبہ کے۔ سب سے پہلی سورت سورۃ الفاتحہ ہے اور سب سے آخری سورۃ الناس ہے۔ سب سے بڑی سورت سورۃ البقرہ ہے جس کی دو سو چھیاسی آیات ہیں اور سب سے چھوٹی سورت سورۃ الکوثر ہے جس کی صرف تین آیات ہیں۔
* بعض اوقات ایک سیپارہ (جز) کو دو حصوں میں تقسیم کیا جاتا ہے جنہیں أَحْزاب کہا جاتا ہے جو حِزْب کی جمع ہے۔ ہر حِزْب کو چار أَرْباع جو رُبْع کی جمع ہے
* ہر سورت میں تین سے لے کر دو سو چھیاسی تک آیات ہیں۔ عموماً بڑی سورتیں شروع کے سیپاروں میں اور چھوٹی سورتیں آخری سیپارے میں ہیں۔
* قرآن میں چھ ہزار سے زاید آیات ہیں۔
* قرآن کی جو آیات مکہ میں نازل ہوئیں انہیں مکی اور جو مدینہ میں نازل ہوئیں انہیں مدنی کہتے ہیں۔
* قرآن کا سب سے پہلا ترجمہ فارسی میں ہوا جو حضرت سلمان فارسی نے کیا تھا۔
* مغربی زبانوں میں سب سے پہلے لاطینی زبان میں ترجمہ ہوا جو رابرٹ کیٹون نے 1143 عیسوی میں کیا تھا۔
* قرآن کا پہلا انگریزی ترجمہ الیگزینڈر راوس نے 1649 میں کیا۔

قرآن کی زبان

قرآن کی زبان فصیح عربی ہے جسے آج بھی ادبی مقام حاصل ہے اور باوجودیکہ عربی کے کئی لہجے (مصری، مراکشی، لبنانی، کویتی وغیرہ) پیدا ہو چکے ہیں، قرآن کی زبان کو ابھی تک عربی کے لیے ایک معیار کی حیثیت حاصل ہے۔ عربی کے بڑے بڑے عالم جن میں غیر مسلم بھی شامل ہیں قرآن کی فصیح، جامع اور انسانی نفسیات سے قریب زبان کی تعریف میں رطب اللسان ہیں۔ اتنی بڑی کتاب ہونے کے باوجود اس میں کوئی گرامر کی غلطی بھی موجود نہیں۔ بلکہ عربی حروف ابجد کے لحاظ سے اگر ابجد کے اعداد کو مدِ نظر رکھا جائے تو قرآن میں ایک جدید تحقیق کے مطابق جو ڈاکٹر راشد الخلیفہ نے شمارندہ (کمپیوٹر) پر کی ہے، قرآن میں باقاعدہ ایک حسابی نظام موجود ہے جو کسی انسان کے بس میں نہیں۔ قرآن میں قصے بھی ہیں اور تاریخی واقعات بھی، فلسفہ بھی ملے گا اور منطق بھی، پیچیدہ سائنسی باتیں بھی ہیں اور عام انسان کی زندگی گزارنے کے طریقے بھی۔ جب قرآن نازل ہوا اس وقت جو عربی رائج تھی وہ بڑی فصیح تھی اور اس زمانے میں شعر و ادب کو بڑی اہمیت حاصل تھی لہٰذا یہ ممکن نہیں کہ قرآن میں کوئی غلطی ہوتی اور دشمن اس کے بارے میں بات نہ کرتے۔ بلکہ قرآن کا دعوہ تھا کہ اس جیسی ایک آیت بھی بنا کر دکھا دیں مگر اس زمانے کے لوگ جو اپنی زبان کی فصاحت اور جامعیت کی وجہ سے دوسروں کو عجمی (گونگا) کہتے تھے، اس بات میں کامیاب نہ ہو سکے۔

قرآن کی پہلی اور آخری آیت

قرآن مجید کی پہلی آیت :
”(اے حبیب!) اپنے رب کے نام سے (آغاز کرتے ہوئے) پڑھئے جس نے (ہر چیز کو) پیدا فرمایا۔ اس نے انسان کو (رحمِ مادر میں) جونک کی طرح معلّق وجود سے پیدا کیا۔ پڑھیئے اور آپ کا رب بڑا ہی کریم ہے۔ جس نے قلم کے ذریعے (لکھنے پڑھنے کا) علم سکھایا۔ جس نے انسان کو (اس کے علاوہ بھی) وہ (کچھ) سکھا دیا جو وہ نہیں جانتا تھا۔ “

قرآن مجید کی آخری آیت :
”آج میں نے تمہارے لئے تمہارا دین مکمل کر دیا اور تم پر اپنی نعمت پوری کر دی اور تمہارے لئے اسلام کو (بطور) دین (یعنی مکمل نظامِ حیات کی حیثیت سے) پسند کر لیا۔ پھر اگر کوئی شخص بھوک (اور پیاس) کی شدت میں اضطراری (یعنی انتہائی مجبوری کی) حالت کو پہنچ جائے (اس شرط کے ساتھ) کہ گناہ کی طرف مائل ہونے والا نہ ہو (یعنی حرام چیز گناہ کی رغبت کے باعث نہ کھائے) تو بیشک اﷲ بہت بخشنے والا نہایت مہربان ہے

تفسیر اور مفسرینِ قرآن

قرآن کا مطلب واضح کرنا تفسیرِ قرآن کہلاتا ہے۔ تفسیر کرنے والے کو مفسر کہتے ہیں۔ تفسیر کے لیے سب سے پہلے قرآن ہی کی مدد لی جاتی ہے اس کے بعد حدیث رسول صلی اللہ علیہ و آلہ و سلم کی مدد لی جاتی ہے۔ اس کے بعد آئمہ و صحابہ کرام کے اقوال مدِ نظر رکھے جاتے ہیں۔ تاریخی طور پر کچھ مشہور ترین تفاسیر کے نام یہ ہیں

* تفسیر طبری
* تفسیر ابنِ کثیر از ابن کثیر
* تفسیر کبیر از فخر الدین رازی
* تفسیر المیزان از علامہ طباطبائی
* تفسیر الجلالین از جلال الدین سیوطی

اردو میں

* عرفان القرآن از شیخ الاسلام ڈاکٹر محمد طاہرالقادری
* تفسیر بیان القرآن از حکیم الامت مولانا اشرف علی تھانوی
* تفسیر معارف القرآن از مفتی محمد شفیع عثمانی دیوبندی
* تفسیر صدیقی از مولوی عبدالقدیر صدیقی
* کنز الایمان از مولانا احمد رضاخان بریلوی
* تدبرِ قرآن از امین احسن اصلاحی
* تفہیم القرآن از مولانا ابو الاعلیٰ مودودی

قرآن میں موجود حروف مقطعات

* تفصیلی مقالہ : حروف مقطعات

حروف مقطعات (عربی: مقطعات، حواميم ، فواتح‎ ) قرآن مجید میں استعمال ہونے والے وہ عربی ابجد کے حروف ہیں جو قرآن کی بعض سورتوں کی ابتدائی آیت کے طور پر آتے ہیں۔ مثلاً الم ، المر وغیرہ ۔ وہ عربی زبان کے ایسے الفاظ نہیں ہیں جن کے بارے میں معلوم ہو۔ ان پر بہت تحقیق ہوئی ہے مگر ان کا مطلب اللہ ہی کو معلوم ہے۔ مقطعات کا لفظی مطلب اختصار (انگریزی میںabbreviation ) کے ہیں۔ بعض خیالات کے مطابق یہ عربی الفاظ کے اختصارات ہیں اور بعض لوگوں کے مطابق یہ کچھ رمز (code) ہیں۔ یہ حروف 29 سورتوں کی پہلی آیت کے طور پر ہیں اور سورۃ الشوریٰ ( سورۃ کا شمار: 42) کی دوسری آیت کے طور پر بھی آتے ہیں۔ یعنی یہ ایک سے پانچ حروف پر مشتمل 30 جوڑ (combinations) ہیں۔ جو 29 سورتوں کے شروع میں قرآن میں ملتے ہیں۔

قرآن جال محیط العالم (انٹرنیٹ) پر اور اس کے خطرات

جال محیط العالم (انٹرنیٹ) کی ترقی سے جہاں مواد کو لوگوں تک پہنچانا آسان ہوگیا ہے وہاں قرآن کے بارے میں ویب سائٹوں کی بہتات ہے جس میں سے کچھ تو درست مواد فراہم کرتے ہیں مگر بیشتر غلطیوں سے پاک نہیں۔ اس میں کچھ تو قرآن کو یونیکوڈ میں لکھنے کی مشکلات ہیں مگر کچھ اسلام کے خلاف کام کرنے والوں کا کام ہے جس میں قرآن کے عربی متن اور اس کے ترجمہ کو بدل کر رکھا گیا ہے۔ جس کا عام قاری اندازہ نہیں لگا سکتا۔ اس لیے یہ ضروری ہے کہ ہم صرف ایسی سائٹس کی طرف رجوع کریں جن کے بارے میں ہمیں یقین ہو کہ وہ درست یا تصدیق شدہ ہیں۔ اس کا ایک حل یہ ہو سکتا ہے کہ ایک ایسا مرکزی ادارہ بنایا جائے جس میں تمام مسلمان ممالک کی حکومتوں کے نمائندے اور ماہرین شامل ہوں اور ماہرین کسی بھی قرآنی ویب سائٹ کی تصدیق کر سکیں اور اسے ایک سرٹیفیکیٹ جاری کر سکیں جو ان کی ویب سائٹ پر لگائی جائے۔ جو کم از کم عربی متن کی تصدیق کرے جیسا پاکستان میں چھپے ہوئے قرآن کے سلسلے میں ہوتا ہے۔اس کی تصدیق کہ کوئی قرآنی ویب سائٹ مصدقہ ہے کہ نہیں، اس مرکزی ادارہ کی ویب سائٹ سے ہو سکے۔ چونکہ انٹرنیٹ پر پابندی نہیں لگائی جا سکتی اس لیے لوگوں کی اپنی کوشش ہوگی کہ وہ اس مرکزی ادارہ کی تصدق شدہ ویب سائٹ کا استعمال کریں۔ تا حال ایسا کوئی ادارہ نہیں مگر مستقبل میں یہ نہائت ضروری ہوگا۔

(Haris Khalid, Lahore)
Back to top Go down
View user profile
Sajid

avatar

Posts : 277
Points : 3683
Reputation : 4
Join date : 29.07.2009
Age : 34
Location : Lahore (Pakistan)

PostSubject: Re: قرآن کے متعلق معلومات   Wed Jul 29, 2009 3:37 am

JAZAK ALLAH KHIAR
Back to top Go down
View user profile
exsata



Posts : 6
Points : 3303
Reputation : 0
Join date : 05.08.2009

PostSubject: Re: قرآن کے متعلق معلومات   Wed Aug 05, 2009 2:33 pm

ماشاآ اللہ بہت مفید معلومات ہیں
مگر اگر اس کا فونٹ بڑا ہوتا تو پڑھنے میں اسانی ہوتی
Back to top Go down
View user profile
Sajid

avatar

Posts : 277
Points : 3683
Reputation : 4
Join date : 29.07.2009
Age : 34
Location : Lahore (Pakistan)

PostSubject: Re: قرآن کے متعلق معلومات   Fri Aug 07, 2009 11:28 am

bhai ab theek hai na font
Back to top Go down
View user profile
capricorn



Posts : 19
Points : 3313
Reputation : 0
Join date : 08.08.2009

PostSubject: Re: قرآن کے متعلق معلومات   Sat Aug 08, 2009 3:45 am

subhanAllah
Back to top Go down
View user profile
Angel



Posts : 170
Points : 3544
Reputation : 1
Join date : 28.07.2009

PostSubject: Re: قرآن کے متعلق معلومات   Mon Aug 10, 2009 10:38 am

thanx for liking
Back to top Go down
View user profile
Sponsored content




PostSubject: Re: قرآن کے متعلق معلومات   

Back to top Go down
 
قرآن کے متعلق معلومات
Back to top 
Page 1 of 1

Permissions in this forum:You cannot reply to topics in this forum
Angels World :: ISLAMIC World :: Islamic Matters-
Jump to: